جنسی حملے کرنے والے وائٹ ہاؤس کیسے پہنچ جاتے ہیں؟

ایک سابقہ ماڈل ایمی ڈورس نے الزام عائد کیا کہ 1997 میں نیویارک میں ہونے والے یو ایس اوپن ٹینس ٹورنامنٹ کے دوران ڈونلڈ ٹرمپ نے انہیں ہراساں کیا اور نہ صرف زبردستی بوسہ لیا بلکہ انہیں غیر اخلاقی طور پر چُھوا بھی۔

یہ انکشاف انہوں نے ایک برطانوی اخبار کو انٹرویو دیتے ہوئے کیا ہے، ایمی ڈورس نے جنسی حملے سے متعلق جو تاریخ بتائی ہے اس وقت وہ 24 سال جب کہ ٹرمپ 51 سال کے تھے اور اپنی دوسری اہلیہ مارلا میپلس کے ساتھ رشتہ ازدواج میں منسلک تھے۔

 امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ پر جنسی ہراسگی اور حملے کے الزامات لگانے والی یہ پہلی خاتون نہیں بلکہ اس سے قبل درجن سے زائد خواتین ڈونلڈ ٹرمپ پر اس قسم کے الزامات لگاچکی ہیں جن میں ایک معروف  امریکی کالم نگار خاتون  جین کیرل بھی شامل ہیں

یہ خبر بھی پڑھیں:موٹروے زیادتی کیس: گرفتار ملزم نے اعتراف جرم کر لیا

جین کیرل کے مطابق سال 1990 میں ڈونلڈ ٹرمپ نے انہیں ڈپارٹمنٹل اسٹور کے چینجنگ روم میں جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔

ایسے الزامات کے باوجود ٹرمپ الیکشن جیت کر وائٹ ہاؤس پہنچنے میں کامیاب ہوگئے اور اب تازہ الزام بھی ایسے وقت سامنے آیا ہے جب امریکی صدارتی انتخاب سر پر آگئے ہیں اور ٹرمپ ایک بار پھر ری پبلکن پارٹی کے امیدوار ہیں۔

سال 2016 میں صدر بننے سے قبل انتخابی مہم کے دوران بھی کئی خواتین نے ٹرمپ پر جنسی ہراساں کرنے کے الزامات عائد کیے تھے تاہم امریک صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اس قسم کے لگائے گئے الزامات کو ہمیشہ مسترد کیا ہے۔

ٹیگز

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
error: Content is protected !!
Close