کوہاٹ۔ کورونا سے بچاؤ کے لیے پولیس پر غیر سنجیدگی کا الزام

ایک طرف کورونا وائرس سے بچاؤ کے کی خاطر صوبائی حکومت کی ہدایات کی روشنی میں تمام بازار، تجارتی مراکز، ہوٹلز اور ریستوران بند ہیں تو دوسری جانب بعض ہوٹلوں پر مقامی پولیس کی نظر کرم کا سلسلہ جاری ہے۔

صوبائی حکومت کی جانب سے بازار مزید ایک ہفتے تک بند رکھے جانے کے نوٹیفکیشن میں یہ بھی بتایا گیا تھا کہ نہ صرف بازار اور دیگر دکانیں بند رہیں گی بلکہ ہوٹلوں کے کیچن بھی بند رہیں گے۔

تاہم کوہاٹ بنوں پھاٹک کے قریب ایک ہوٹل ایسا بھی ہے جس کو کیچن چلانے، پارسل بیچنے اور گاہکوں کو لائن میں کھڑا کرنے کی ابھی تک غیر اعلانیہ اجازت دی گئی ہے۔

اسی مقام پر موجود ایک دوسری ہوٹل کے مالک عبدالرحمان نے بے باک آواز کو بتایا کہ تھانہ کینٹ کے ایس ایچ او نے امتیازی رویہ اختیار کیا ہوا ہے۔

انہوں نے الزام عائد کیا کہ پولیس کی جانب سے انہیں ہوٹل کا شٹر کھولنے کی بھی اجازت نہیں لیکن ان کے سامنے پیاؤنور کباب فروش کو ہوٹل کھولنے، کیچن کھلا رکھنے اور گاہکوں کو پارسل فروخت کرنے کی مکمل اجازت دی گئی ہے۔

انہوں نے ڈی پی او کوہاٹ منصور امان سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اپنی ہوٹل پر پارسل بیچنے کا مطالبہ رکھیں نہ رکھیں لیکن یہ مطالبہ ضرور کریں گے کہ کورونا وائرس سے بچاؤ کے لیے انتظامات پر سختی سے عملدرامد کرایا جائے اور اس سنجیدہ معاملے میں لاپرواہی کرنے والے ایس ایچ او اور ہوٹل مالک کے خلاف کارروائی کی جائے۔

ٹیگز

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
error: Content is protected !!
Close