کوہاٹ ڈویژنل ہیڈ کوارٹرہسپتال سے کورونا وائرس پھیلانے کی ایک اور کہانی

کوہاٹ ڈویژنل ہیڈ کوارٹر ہسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر رحیم نے کورونا وائرس پھیلانے کا ٹھیکہ لے لیا انتہائی باوثوق ذرائع کے مطابق ایم جمیل (شکردرہ کی سیاسی و سماجی شخصیت ) نامی کورونا وائرس کے مشتبہ مریض کا پی سی آر ٹیسٹ کے لیے نمونہ لے کر گھر بھیج دیا گیا۔


کورونا وائرس کی ایس او پیز کے مطابق کرونا وائرس کے مشتبہ مریض کا سواب نمونہ لے کر اس کو ہسپتال میں قرنطین کر دیا جاتا ہے اور ٹیسٹ کا نتیجہ آنے تک مریض کو قرنطینہ میں رکھا جاتا ہے ٹیسٹ میں کرونا وائرس کی تشخیص کی صورت میں مریض کو ہسپتال کے آئسولیشن وارڈ منتقل کر دیا جاتا ہے

تاہم ڈویژنل ہیڈ کوارٹر ہسپتال کے میڈیکل سپرنٹینڈنٹ ڈاکٹر رحیم خٹک نے مبینہ طور پر مذکورہ مریض کو سابق صوبائی وزیر کے دباؤ میں آکر گھر جانے کی اجازت دے دی جہاں وہ جانبر نہ ہو سکا جبکہ مریض کے پی سی آر ٹیسٹ میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوگئی۔

ذرائع کا کہناہے کہ مریض کو مردہ حالت میں لیاقت میموریل ویمن اینڈ چلڈرن ہسپتال لایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے موت کی تصدیق کر دی۔

لیاقت میموریل ویمن اینڈ چلڈرن ہسپتال کے ڈی ایم ایس ڈاکٹر فدا کے مطابق ایمرجنسی وارڈ سیل کر دیا گیا ہے جبکہ ایمرجنسی سروسز متبادل جگہ پر کھولنے کا فیصلہ مشاورت سے کیا جائے گا

ڈاکٹر فدا کے مطابق ایمرجنسی وارڈ میں فرائض سر انجام دینے والے ڈاکٹر اور نرسنگ سٹاف کو احتیاطاً گھر میں رہنے کی تلقین کر دی گئی ہے مذکورہ واقعے کے بارے میں ڈویژنل ہیڈ کوارٹر ہسپتال کی انتظامیہ کا موقف جاننے کے لیے بارہا ایم ایس ڈاکٹر رحیم خٹک سے رابطے کی کوشش کی گئی لیکن نہ تو انہوں نے فون اٹھانے کی زحمت کی اور نہ ہی وٹس ایپ وائس میسج کا جواب دیا۔

قابل ذکر بات یہ ہے کہ اپنی نوعیت کا یہ کوئی پہلا واقعہ نہیں ہے اس سے قبل بھی کورونا وائرس مشتبہ مریضوں کے نمونے لیکر ان کو گھر بھیجا اور ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد ان کو گھر سے ایمبولینس میں لایا گیا صرف اتناہی نہیں بلکہ کورونا وائرس کے تصدیق شدہ مریضوں کو ہسپتال سے ڈسچارج کیا گیا اور پھر غلطی قرار دے کر دوبارہ ہسپتال لایا گیا۔

ٹیگز

طاہر رشید

طاہر رشید نوجوان صحافی ہیں جو کہ گذشتہ آٹھ سال سے بے باک آواز کے ساتھ منسلک ہیں اور بطور ایڈیٹر انوسٹی گیشن اپنے فرائض سرانجام دے رہے ہیں

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close