پشاور: خواجہ سراء گل پاںڑہ قتل کیس کا اہم ملزم گرفتار

پشاور پولیس نے خواجہ سراء قتل کیس میں بڑی کامیابی حاصل کرتے ہوئے واردات میں نامزد مرکزی ملزم رفیع اللہ کو گرفتار کر لیا ہے۔

9 ستمبر کو پشاور میں شکیل عرف گل پانڑہ کو فائرنگ کرتے ہوئے قتل کر دیا گیا تھا جبکہ واقعے میں ایک خواجہ سراء طارق عرف چاہت زخمی ہوا تھا۔ جس میں مذکورہ بالا ملزم کو نامزد کیا گیا تھا۔

پولیس ذرائع نے بتایا ہے کہ ملزم کی نشاندہی پر شریک ملزمان کے خلاف بھی کارروائی کی جا رہی ہے،

دوسری جانب سی سی پی او پشاور محمد علی خان گنڈا پور نے پیر کے روز میڈیا کو بتایا ہے کہ خواجہ سرا کمیونٹی کے تحفظ کو یقینی بنانے کے لئے پشاور پولیس خصوصی اقدامات کر رہی ہے۔
اور اس مقصد کے لیے ایس پی سٹی اور اے ایس پی گلبہار کو فوکل پرسن مقرر کردیا گیا ہے۔

تھانہ گلبہار میں قائم ویکٹم سپورٹ ڈیسک اب خواجہ سرا کمیونٹی کے لئے بھی ویکٹم سپورٹ ڈیسک کے طور پر کام کرے گی جہاں لیڈیز کانسٹیبل شکایات موصول کرنے کے لیے موجود رہیگی۔

یاد رہے کہ پاکستان میں مختلف اوقات میں خواجہ سراؤں کو قتل اور زخمی کرنے کے واقعات رونما ہوتے رہتے ہیں جبکہ ماضی میں خواجہ سراء پولیس کی جانب سے بھی تنگ کیے جانے کے حوالے سے احتجاجی مظاہرے کر چکے ہیں۔

ٹیگز

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
error: Content is protected !!
Close