اقتدار ملا تو ٹیکسوں کا خاتمہ کریں گے۔ سراج الحق کا خطاب

لوئر دیر

جماعت اسلامی کے مرکزی امیر سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ مدارس کے تعلیمی بورڈز کو فرقوں کی بنیاد پر تقسیم کرنا حکومت کی سازش ہے تعلیمی اداروں اور مدارس میں یکساں نظام تعلیم رائج کیا جائے،پرائمری سکولوں سے سازش کے تحت معلم دینیات کا خاتمہ مغربی ایجنڈا ہے،قوم سے چالیس اقسام کا ٹیکس وصول کیا جارہا ہے،

ان خیالات کا اظہار انھوں نے جامعہ عالیہ احیاء العلوم بلامبٹ میں سالانہ ختم بخاری شریف کی دستار بندی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا

سینیٹر سراج الحق نے حکومت کو کڑی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ وفاقی حکومت ایک سازش کے تحت فرقہ واریت کو فروغ دے رہی ہے

انھوں نے کہاکہ تعلیمی اداروں اور مدارس کے لئے ایک بورڈ،نصاب اور نظام ہونا چاہیئے تاکہ قوم افراتفری کا شکار نہ ہوں انھوں نے کہاکہ دینی مدارس دین اسلام کے مورچے ہیں اور مغرب کا جھگڑا مسجد،قرآن اور عالم دین کے ساتھ ہے

حکومت ظالمانہ طریقے سے غرباء اور امیروں سے چالیس اقسام کے ٹیکس وصول کررہی ہے جو غریب عوام کے خون پسینے کی کمائی کے ساتھ مذاق ہے

انھوں نے کہاکہ جماعت اسلامی کو اقتدار ملا تو ٹیکس کی بجائے عشر،زکواۃ اور صدقے کا نظام نافذ کرکے اسلام کاحقیقی چہرہ دنیا کے سامنے لائیں گے

 

ٹیگز

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
error: Content is protected !!
Close