موٹروے زیادتی کیس میں اہم پیش رفت، ایک ملزم نے گرفتاری دیدی

موٹر وے زیادتی کیس میں ایک اہم پیش رفت ہوئی ہے پولیس کے مطابق واقعے کے ایک ملزم نے خود کو سی آئی اے پولیس کے حوالے کردیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق ملزم وقارالحسن رشتے داروں کے دباؤ کی وجہ سے ماڈل ٹاؤن پولیس کے روبرو پیش ہوا۔

وقار الحسن نے پولیس کو بتایا کہ ملزم عابد کے ساتھ دیگر مقدمات میں شریک ملزم رہا ہے لیکن ان کا موٹر وے زیادتی کیس سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

یاد رہے کہ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار اور آئی جی پنجاب انعام عنی نے گزشتہ روز موٹر وے زیادتی کیس میں ملوث دو ملزمان عابد اور وقارالحسن کی نشاندہی کی تھی۔

گذشتہ روز اعلیٰ سطح کی پریس کانفرنس میں ملزم وقار کی تفصیلات جاری کی گئی تھیں اور بتایا گیا تھا کہ ملزم وقار قلعہ ستار شاہ شیخوپورہ کا رہنے والا ہے۔

 9 ستمبر کو لاہور کے علاقے گجر پورہ میں موٹر وے پر خاتون کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا تھا۔

دو افراد نے موٹر وے پر کھڑی گاڑی کا شیشہ توڑ کر خاتون اور اس کے بچوں کو نکالااور سب کو قریبی جھاڑیوں میں لے گئے اور پھر خاتون کو بچوں کے سامنے زیادتی کا نشانہ بنایا۔

پنجاب کے وزیر قانون راجہ بشارت نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ یہ ایک ایسی واردات ہے جس کا کوئی ثبوت نہيں کہ اسے لے کر آگے چلیں، یہ کیس پنجاب حکومت اور لاہور پولیس کے لیے چیلنج ہے کہ اصل ملزم تک پہنچ کر اسے سزا دلوائی جائے۔

وزیراعظم عمران خان نے کیس کی مذمت کرتے ہوئے ملزمان کی جلد از جلد گرفتاری اور انہیں قانون کے مطابق سزا دینے کی ہدایات دی تھیں۔

دوسری جانب پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ عمران خان منافقت کررہے ہیں انہیں استعفا دینے کا بہت شوق تھا تو اب وقت آگیا ہے کہ وہ استعفا دیں۔

ٹیگز

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
error: Content is protected !!
Close