لکی مروت: ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کا افسر بے تاج بادشاہ بن گیا

ڈیرہ اسماعیل خان

ایکسائز ٹیکسیشن اینڈ نارکاٹیکس کنٹرول کے افسران بے لگام ہوگئے ہیں ،خود غیر قانونی گاڑیوں کا استعمال کرکے جگہ جگہ پر ناکے لگا کر عزت دار شہریوں کو گاڑیوں کے کاغزات پر تنگ کرکے ان سے زبردستی رشوت وصول کرتے ہیں

قبائلی مشرسبحان وزیر کا کہنا ہے کہ حسب معمول صبح ضروری کام سے بنوں جانا ہوا تو لکی مروت میں گنڈی چوک پر کھڑے ایکسائز ٹیکسیشن اینڈ نارکاٹیکس کنٹرول کے انسپکٹر فیصل خان نے اس سے روک لیا اور انہیں تنگ کرنا شروع کر دیا

انہوں نے الزام عائد کیا کہ گاڑی کے ہر قسم کے دستاویزات کے باوجود حسب معمول اپنی روایات کو برقرار رکھ کر عزت دار شہریوں کے ساتھ نازیبا زبان کا استعمال کرکے تنگ کرنا ایک معمول بنا ہوا ہے۔

لکی مروت ،بنوں اور ڈیرہ اسماعیل خان کے انچارج ذمہ داران سے جب اس ایکسائز ٹیکسیشن اینڈ نارکاٹیکس کنٹرول کے انسپکٹر فیصل خان کی شکایت کی گئی تو ایکسائز کے ان ذمہ داران کا کہنا تھا کہ یہ انکے دسترس یعنی کنٹرول میں نہیں اور کہا گیا کہ یہ ڈی جی خیبر پختونخوا ایکسائز ٹیکسیشن اینڈ نارکاٹیکس کنٹرول فیاض علی خان اور ڈائریکٹر نارکاٹیکس کنٹرول عسکر خان کا خاص بندہ ہے اور انکے کہنے پر عزت دار شہریوں کو گاڑیوں کے قانونی دستاویزات پر تنگ کرکے رشوت لینا ایک معمول بنا ہوا ہے

قبائلی مشرسبحان وزیر کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی کی حکومت کا پہلا نعرہ یہی تھا کہ ملک کو کرپٹ عناصر سے صاف کرنا ہے ،انہوں نے صوبائی حکومت سے اپیل کی ہے کہ گانڈی چوک لکی مروت پر تعینات اس غیر قانونی ایکسائز ٹیکسیشن اینڈ نارکاٹیکس کنٹرول کے انسپکٹر فیصل خان اور ساتھ کرائے پر رکھے ہوئے ٹاوٹس کے خلاف سخت سے سخت کارروائی کی جائے تاکہ وہ آئیندہ کیلئے کسی بھی عزت دار شہریوں کو تنگ کرنا اور انکے ساتھ نازیبا زبان استعمال کرنا نہ پڑے۔

ابھی تک ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن حکام کا مؤقف سامنے نہیں آیا۔

ٹیگز

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
error: Content is protected !!
Close