روزانہ 8 سے زائد بچوں کیساتھ زیادتی، رپورٹ منظر عام پر آگئی

بچوں کے حقوق کے حوالے سے کام کرنے والی غیر سرکاری تنظیم نے اپنی ایک رپورٹ میں انکشاف کیا ہے کہ رواں سال کے ابتدائی 6 ماہ کے دوران پاکستان میں یومیہ 8 سے زائد بچے جنسی زیادتی کا شکار ہوئے ہیں

غیر سرکاری تنظیم ساحل کی ایک رپورٹ کے مطابق ملک بھر میں رواں سال کے 6 ماہ کے دوران یومیہ 8 سے زائد بچے زیادتی کا نشانہ بنے،  بچوں کے ساتھ زیادتی کے سب سے زیادہ واقعات صوبہ پنجاب میں رپورٹ ہوئے ہیں ۔

رپورٹ میں جنوری سے جون کے دوران زیادتی کا نشانہ بننے والے بچوں کے اعدادو شمار شامل کیے گئے یہ اعدادو شمار 84 اخبارات میں شائع ہونے والی خبروں سے لیے گئے ہیں۔

 رپورٹ کے مطابق ابتدائی 6 ماہ میں پاکستان میں 497 بچوں کو زیادتی کا نشانہ بنایا گیا اور 6 ماہ کے دوران227 بچوں سے زیادتی کی کوشش کی گئی۔

سال کے ابتدائی چھ ماہ کے عرصے میں 173 بچوں کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا 331 بچوں کو اغوا کیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق 38 بچوں کو زیادتی کے بعد قتل کردیا گیا۔ اعداد و شمار کے مطابق 53 فیصد لڑکیوں اور 47 فیصد لڑکوں کے ساتھ زیادتی کی گئی، پنجاب میں 57 فیصد، سند میں 32 فیصد ار خیبر پختونخوا میں بچوں کے ساتھ زیادتی کے 6 فیصد واقعات رپورٹ ہوئے ہیں۔

ٹیگز

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
error: Content is protected !!
Close