لاپتہ افراد کی رہائی کے لیے عوامی نیشنل پارٹی کی احتجاجی ریلی

کوہاٹ (اعجاز اورکزئی)کوہاٹ میں قوم پرست سياسی جماعت عوامی نیشنل پارٹی (اے این پی) نے بلوچستان عوامی نیشنل پارٹی (اے این پی) کے صوبائی رہنما اسد اللہ خان اچکزئی اور دیگر لاپتہ افراد کی بازیابی کے لئے احتجاج کیا اور کنگ گیٹ سے کچہری چوک تک احتجاجی ریلی نکالی

ریلی کے شرکاء سے خطاب میں عوامی نیشنل پارٹی کے کلچر ونگ کے سیکرٹری سید لائق باچا، ضلعی صدر جاوید خٹک و دیگر رہنماؤں نے کہا کہ ملک میں بدامنی اپنے عروج پر ہے اور عوام عدم تحفظ کا شکار ہے لوگوں کو غیر قانونی طور پر لاپتہ کیا جارہا ہے جبکہ آئین پاکستان ہر شہری کو ضمانت دیتا ہے کہ اس کے ساتھ قانون کے مطابق سلوک کیا جائے اس سے قبل طالبان عوام کے اغواء میں ملوث تھے اب یہی کام ریاست کر رہی ہے آخر لاپتہ افراد کی فریاد کس سے کریں
انہوں نے مزید کہا کہ ڈسکہ میں دن دہاڑے پریذائیڈنگ افسر کو غائب کر دیا جاتاہے جبکہ پولیس سمیت ایک بھی ادارہ اپنے فرائض احسن طریقے سے انجام نہیں دے رہا
پولیس پر کڑی تنقید کرتے ہوئے انکا کہنا تھا کہ پولیس اپنی نااہلی اور ناکامی پر پردہ ڈالنے کے لیے اصل مجرم کو گرفتار کرنے کے بجائے بے گناہ لوگوں کو گرفتار کرکے خانہ پری کر رہی ہے

شہر میں جابجا سیکورٹی کیمرے لگے ہوئے ہیں لیکن اس کے باوجود اصل مجرم آزاد گھوم رہے ہیں موجودہ حکومت عوامی نیشنل پارٹی کے دور حکومت میں تکمیل شدہ ترقیاتی منصوبوں پر اپنی تختیاں لگانے میں مصروف ہے جبکہ اپنی نااہلی کی وجہ سے اول تو نئے منصوبے شروع ہی نہیں کر پاتی اور جو منصوبے بھی موجودہ حکومت نے شروع کئے تمام کے تمام کرپشن اور کمشن خوری کی داستانوں سے بھرے پڑے ہیں

احتجاجی ریلی میں پختون سٹوڈنٹس فیڈریشن سمیت درہ آدم خیل اور تحصیل لاچی سمیت کوہاٹ کے مختلف علاقوں سے عوامی نیشنل پارٹی کے کارکنوں نے شرکت کی

ٹیگز

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
error: Content is protected !!
Close