شاہد آفریدی کے آبائی علاقے چمبئی میں کورونا کا کیس سامنے آگیا

کوہاٹ. آل راؤنڈر شاہد خان آفریدی کے آبائی علاقے کے رہائشی ایک شخص میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوگئی ہے.
وائرس سے متاثرہ شخص کو ڈویژنل ہیڈکوارٹر ہسپتال کے آئیسولیشن وارڈ منتقل کر دیا گیا ہے.

ہسپتال ذرائع کے مطابق تماش خان علاقہ چمبئی کا رہائشی ہے جوکہ اسی مہینے کی سترہ تاریخ کو دبئی سے وطن واپس آیا تھا جسے شک ہوا کہ وہ کورونا وائرس کا شکار ہوتا جا رہا ہے جس کے بعد وہ خود ٹیسٹ کروانے کے لیے ہسپتال گیا.

خاندانی ذرائع کے مطابق متاثرہ شخص کے نمونے اکیس مارچ کو لیے گئے اور نتائج مثبت آنے پر سرکاری ایمبولینس میں انہیں ہسپتال منتقل کر دیا گیا.
خاندانی ذرائع کے مطابق ٹیسٹ کے بعد متاثرہ شخص نے اپنے ہی گھر میں تنہائی اختیار کر لی تھی اور کسی سے ملنے جلنے سے مکمل گریز کیا.

مریض میں کورونا وائرس کی تصدیق ہونے کے بعد پولیس نے مساجد میں اعلانات کے ذریعے لوگوں کو کچھ دنوں تک دکانیں بند رکھنے اور بلا ضرورت گھر سے نکلنے سے گریز کی ہدایت کی ہے تاہم گاؤں کو سیل نہیں کیا گیا ہے.

یاد رہے کہ کوہاٹ ڈویژن میں یہ چوتھا مریض ہے جس میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے.

اس سے قبل لوئراورکزئی کے سید حسن اور درہ آدم خیل میں کوئٹہ سے آئی ہوئی تبلیغی جماعت کے دو افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق ہو چکی ہے.

سرکاری ذرائع کے مطابق کوہاٹ سے ابھی تک 36 افراد کے نمونے لیبارٹری کے لیے بھیجے جا چکے ہیں جن میں تین کے ٹیسٹ مثبت آئے ہیں ابھی آٹھ افراد کے ٹیسٹ کے نتائج آنا باقی ہیں.

شاہد آفریدی کوہاٹ میں مقیم

‌یاد رہے کہ مایہ ناز کرکٹ آل راؤنڈر شاہد خان آفریدی بھی آج کل گاؤں چمبئی میں اپنے آبائی گھر میں مقیم ہیں اور لاک ڈاؤن سے متاثر ہونے والے مزدور کار لوگوں میں راشن کی تقسیم کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہیں.

ٹیگز

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
error: Content is protected !!
Close