پی سی بی سنٹرل کنٹریکٹ، شائقین نے مصباح الحق کو آڑے ہاتھوں لے لیا

‏پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے سیزن 21-2020 کیلئے 18 قومی کرکٹرز کے لیے سینٹرل کنٹریکٹ کا اعلان کیا ہے حسن علی ، محمد عامر اور وہاب ریاض سینٹرل کنٹریکٹ حاصل کرنے میں کامیاب نہیں ہو سکے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ نے چیئرمین احسان مانی کی منظوری کے بعد سینٹرل کنٹریکٹ حاصل کرنے والے کھلاڑیوں کے ناموں کا اعلان کیا ہے۔ فاسٹ بولر نسیم شاہ اور افتخار احمد پہلی مرتبہ سینٹرل کنٹریکٹ حاصل کرنے میں کامیاب ہوئے ہیں اور انہیں سینٹرل کنٹریکٹ کی سی کیٹیگری میں شامل کیا گیا ہے۔

اس مرتبہ بھی کھلاڑیوں کو 3 کیٹیگریز یعنی ‘اے’، ‘بی’ اور ‘سی’ میں تقسیم کیا گیا ہے۔ ‏ اے کیٹیگری میں شامل سابق کپتان سرفراز احمد اور لیگ اسپنر یاسر شاہ کی تنزلی ہو گئی ہے اور دونوں کرکٹرز اب بی کیٹیگری میں شامل ہوں گے۔

ٹیسٹ کپتان اظہر علی اور تینوں فارمیٹ میں پاکستان کی نمائندگی کرنے والے شاہین شاہ آفریدی کو بھی اے کیٹیگری مل گئی ہے، اس کیٹیگری میں شامل تیسرے کھلاڑی ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی کے کپتان بابرا عظم ہیں۔ بابر اعظم کو ٹی ٹوئنٹی کے ساتھ اب ون ڈے کی قیادت بھی سونپ دی گئی ہے جبکہ وہ ٹیسٹ میں اظہر علی کے ساتھ نائب کپتان ہوں گے۔

‏ فاسٹ بولرز محمد عامر، وہاب ریاض اور حسن علی کنٹریکٹ حاصل کرنے میں ناکام رہے۔بورڈ حکام کے مطابق محمد عامر ریڈ بال کرکٹ سے ریٹائر منٹ لے چکے ہیں جبکہ وہاب ریاض نے ریڈ بال کرکٹ سے خود کو الگ کر رکھا ہے اور حسن علی فٹنس مسائل سے دوچار ہیں۔

میڈیا سے گفتگو کرتےہوئے چیف سلیکٹر اور ہیڈ کوچ مصباح الحق نے کہا کہ کورونا وائرس کی صورت حال سب کیلئے چیلنجنگ ہے اس کے باوجود پی سی بی نے قومی کرکٹرز کیلئے سینٹرل کنٹریکٹ کا اعلان کیا ہے جو کہ ایک اچھی چیز ہے تاکہ کھلاڑیوں کیلئے جو ایک غیر یقینی کی صورتحال پیدا ہو رہی تھی وہ نہ ہو اور کھلاڑی خود کو محفوظ تصور کریں

انہوں نے کہا کہ ‏ریڈ بال کرکٹ (ٹیسٹ کرکٹ) سے ریٹائرمنٹ لینے والے محمد عامر، رخصت لینے والے وہاب ریاض اور انجرڈ حسن علی سینٹرل کنٹریکٹ میں شامل نہیں ہیں ، مصباح الحق کا کہنا ہے کہ عامر، وہاب اور حسن علی کو ڈراپ کرنا ایک مشکل فیصلہ تھا ، فاسٹ بولر حسن علی کمر کی تکلیف کا شکار ہو گئے ہیں پی سی بی ان کا خیال رکھے گا، ان کا ری ہیب بھی شروع کیا جا رہا ہے۔

دوسری جانب فاسٹ باؤلرز کو مرکزی کنٹریکٹ سے دور رکھے جانے پر سوشل میڈیا صارفین نے مصباح الحق کو آڑے ہاتھوں لے لیا اور ان کے اس فیصلے کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

ڈاکٹر عارفہ نامی ٹویٹر صارفہ نے کہا ہے کہ تینوں کھلاڑیوں کے لیے اداسی محسوس کر رہی ہیں۔ تینوں ان کے پسندیدہ کھلاڑی ہیں ایسا لگتا ہے جیسے مصباح الحق ٹیم کو تباہ کر رہے ہیں

ایک دوسرے ٹویٹر صارف نے کہا ہے کہ وہ مصباح کے اس فیصلے کے خلاف احتجاج کرنے جا رہے ہیں ان کے ساتھ تعاون کیا جائے ۔ مصباح خدا کے لیے پی سی بی کو چھوڑ دو اور گھر جا کر بیٹھ جاؤ۔

محمد سہیل اسم علوی نامی صارف نے اپنے ٹویٹ میں لکھا ہے کہ مصباح نے چول قسم کا قدم اٹھایا ہے۔ مصباح آپ چاہتے کیا ہیں آپ ماضی کی طرح پاکستان کرکٹ کو تباہ کرنا چاہتے ہیں۔ یہ دیکھیں کہ ان تینوں کھلاڑیوں کے بغیر ہم کہاں کھڑےہیں۔

ٹیگز

متعلقہ پوسٹس

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
error: Content is protected !!
Close