بشری مانیکا کے حوالے سےاہم خبر سامنے آگئی

اسلام آباد (ویب ڈیسک) گذشتہ روز خاتون اول بشریٰ بی بی نے پہلی مرتبہ نجی ٹی وی چینل کو انٹرویو دیا جو خبروں کی زینت بنا ہوا ہے۔ اس انٹرویو میں بشریٰ بی بی نے انٹرویو کے لیے اینکر ندیم ملک کا انتخاب کرنے کی اصل وجہ سامنے سامنے آگئی

انٹرویو کے دوران بشریٰ بی بی نے اپنی شادی سے پہلے اور شادی کے بعد کی روٹین سے آگاہ کیا اور عوام کی جانب سے اُٹھائے جانے والے سوالات کا بھی جواب دیا۔ بشریٰ بی بی کا کہنا تھا کہ میرے بارے میں بہت سی غلط اور غیر مناسب خبریں پھیلائی گئیں جن میں کوئی سچائی نہیں تھی۔مجھے کبھی بھی نبی کریم ﷺ کی اس طرح سے زیارت نہیں ہوئی کہ انہوں ﷺ نے مجھے عمران خان سے شادی کا حکم دیا ہو۔ یہ بالکل جھوٹ ہے اور جس نے بھی یہ کہا ہے میری سمجھ سے باہر ہے کہ اس کی زبان میں اتنی ہمت کیسے آ گئی کہ اُس نے یہ الفاظ ادا کر دئے۔ نبی کریم ﷺ اتنی بڑی ہستی ہیں اور رحمت العالمین ہیں۔ان کی رحمت اور کرم نوازی سے گھر بنتے ہیں ،گھر جُڑتے نہیں ہیں۔ انہوں نے اینکر ندیم ملک سے مخاطب ہوتے ہوئے کہا کہ جب لوگ عمران خان کے ساتھ میری شادی کے بارے میں غیرشائستہ تبصرے کر رہے تھے تب آپ نے ہی مہذب انداز میں بات کی اور میں نے اسی وقت سوچ لیا تھا کہ ویسے تو میں کبھی انٹرویو نہیں دوں گی لیکن اگر کبھی انٹرویو دیا تو آپ کو ہی دوں گی یاد رہے کہ بشریٰ بی بی اور عمران خان کی شادی کے بعد کئی خبریں گردش کرتی رہی تھیں جن میں سے ایک خبر یہ بھی تھی کہ بشریٰ بی بی کو خواب میں رسول پاک ﷺ کی زیارت ہوئی ہے ، اور بشریٰ بی بی کو عمران خان سے شادی کرنے کا حکم دیا گیا ہے اسی لیے بشریٰ بی بی نے عمران خان سے شادی کی۔ لیکن اپنے پہلے انٹرویو میں خاتون اول بشریٰ بی بی نے ان تمام باتوں کی تردید کردی اور کہا کہ ان باتوں میں کوئی سچائی نہیں ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں